تعبیرخواب

خاکستر(راکھ)

حضرت ابن سیرین رحمتہ اللہ تعالیٰ علیہ نے فرمایا ہے کہ خواب میں راکھ مال باطل ہے جو بادشاہ کی طرف سے ہوتا ہے اور کسی کے پاس نہیں رہتا ہے ۔ اول اہل تعبیر نے بیان کیا ہے کہ ایسا علم حاصل کرے گا جس میں خیر ومنفعت نہ ہو گی ۔
حضرت جعفر صادق علیہ السلام نے فرمایا ہے کہ خواب میں خاکستر نو وجہ پر ہے ۔ اول نا مقبول علم ، دوم مال حرام ، سوم بے ہودہ کام ، چہارم جھگڑا ، پنجم بدکاری ۔ ششم مکرو حیلہ ، ہفتم حسرت و افسوس ،ہشتم پشیمانی ، نہم ایسا کام کہ جس میں بہتری نہ ہو گی ۔ فرمان حق تعالیٰ ہے ۔ مثل النین کفرو ابربھم اعمالھم کرمالھ اشت بہ الریح فی یوم عاصف(جو لوگ اپنے رب کے ساتھ کفر کرتے ہیں ان کا حال راکھ کے مشابہ ہے جسے جھگڑ کے دن آند ھی اڑائے لئے پھرتی ہے