تعبیرخواب

شستن(دھونا)

حضرت ابن سیرین رحمتہ اللہ تعالیٰ علیہ نے فرمایا ہے ۔ کہ خواب میں اپنے آپ کو نہر کا ریز ، حوض یا دریا کے پانی سے دھونا غم و اندوہ سے نجات پانے پر دلیل ہے ۔ اور اگر خواب کو قیدی دیکھے تو قید خونے سے نجات پائے گا ۔ اور اگر قرض دار ہے تو قرض سے سرخرو ہو گا ۔ اور اگر بیام دیکھے تو شفاء پائے گا اگر سارے جسم کے ساتھ پانی میں نہیں بیٹھا تو کام تمام نہ ہو گا ۔
حضرت ابراہیم کرمانی رحمتہ اللہ تعالیٰ علیہ نے فرمایا ہے ۔ اگر خواب میں دیکھے کہ اپنے مردے کو دھویا ہے ۔ دلیل ہے کہ اس کے خویش و اقارب غم واندوہ سے خلاصی پائیں گے ۔ اور اگر دیکھے کہ نمکین پانی سے اپنے آپ کو دھوتا ہے ۔ دلیل ہے کہ اس کو رنج پہنچے گا ۔ اور اگر دیکھے کہ پاک کپڑا گندے پانی سے دھوتا ہے ۔ تو اس کے کام کی تباہی اور دین کے فساد پر دلیل ہے ۔ اور اگر دیکھے کہ اپنے آپ کو سرد یا میلے پانی سے د ھویا ہے ۔ دلیل ہے کہ توبہ کرے گا ۔
حضرت جابر مغربی رحمتہ اللہ تعالیٰ علیہ نے فرمایا ہے کہ سرد پانی سے ہاتھ دھونا چار وجہ پر ہے ۔ (۱)توبہ(۲)عافیت(۳)قید سے خلاصی(۴)خوف سے امن میں رہنا۔
اور گرم پانی سے ہاتھ منہ کا دھونا غم واندوہ ہے ۔ اور خواب میں ہاتھ منہ کا دھونا بقول حضرت جعفر صادق علیہ السلام نے آٹھ وجہ پر ہے (۱)مراد کا حاصل ہونا(۲)بیماری سے شفاء (۳)مال کا پانا(۴)حج(۵)خوشی(۶)امن(۷)دین کی صفائی(۸)ضرورت کا پورا ہونا ۔