تعبیرخواب

شہرہائے مفرددیدن (ایک ایک شہر دیکھنا )

حضرت ابراہیم کرمانی رحمتہ اللہ تعالیٰ علیہ نے فرمایا ہے ۔ اگر آپ کو مکے شریف میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ عزت اور مرتبہ پائے گا ۔ اور اگر اپنے آپ کو مدینہ شریف میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ اس کی صحبت تاجروں سے ہو گی اور ان سے نفع ہو گا۔
اور اگر اپنے آپ کو شہر یمن میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ ڈر اور دہشت سے امن میں ہو گا ۔ اور اگر اپنے آپ کو طائف میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ سفر بہت کرے گا۔ اور نیک ہو گا ۔ اور اگر اپنے آپ کو بصے میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ عالموں سے شرف صحبت اٹھائے گا ۔
اور اگر اپنے آپ کو واسط میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ دیندار اور پارسا ہو گا ۔ اور اگر اپنے آپ کو کوفے میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ عام لوگوں سے نیکی پائے گا۔ اور اگر اپنے آپ کو بغداد میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ مال دار ہو گا اور اس کو تجارت نفع دے گی۔
اور اگر اپنے آپ کو حلوان میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ مال دار ہو گا اور اس کو تجارت نفع دے گی ۔
اور میں اصفہان دیکھنا کی سردار کی صحبت دلیل ہے ۔ اور موصل دیکھنا حصول مراد پر دلیل ہے ۔ اور دمشق دیکھنا فراخ روزی پر دلیل ہے ۔ اور حلب دیکھنا کسی سردار سے منفعت پر دلیل ہے۔ اور انطاکیہ دیکھنا بھی ایسا ہی ہے ۔
اور بیت المقدس دیکھنا عزت اور مراد پانے پر دلیل ہے اور اخلاط کا دیکھنا کام کی پریشانی پر دلیل ہے ۔ اور قیصر یہ کا دیکھنا منفعت پر دلیل ہے ۔
اور اگر اپنے آپ کو دژ میں قید دیکھے ۔ دلیل ہے کہ اس کا کام رکے گا اور تفلس کا دیکھنا کام کے نقصان پر دلیل ہے ۔ اور گنجہ کا دیکھنا نعمت کی زیادتی پر دلیل ہے ۔ اور خوے کا دیکھنا مال کی کمی پر دلیل ہے ۔ اور مراغہ کا دیکھنا امان اور راحت پر دلیل ہے اور تبریز کا دیکھنا غم سے نجات پر دلیل ہے ۔ اور رنگان کا دیکھنا غم پر دلیل ہے ۔ اور ہمدان کا دیکھنا مراتبہ اور منفعت پر دلیل ہے اور قزوین کا دیکھنا سردار کی صحبت پر دلیل ہے ۔
اور رے کا دیکھنا قسم کھانے پر دلیل ہے اور گرگان کا دیکھنا جھگڑے میں پرنے پر دلیل ہے ۔ اور دہستان کا دیکھنا فکر مندی پر دلیل ہے ۔ اور بسطام کا دیکھنا خوشی پر دلیل ہے ۔
اور گر اپنے آپ کو شہر طوس میں دیکھے۔ دلیل ہے کہ خیرو منفعت پائے گا۔ اور اگر اپنے آپ کو بلخ میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ دشمن پر فتح پائے گا۔
اور اگر اپنے آپ کو سمر قند میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ لوگوں میں نامدار ہو گا۔ اور اگر اپنے آپ کو غزنی میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ لوگوں میں نامدار ہو گا۔ اور اگر اپنے آپ کو کاشغر میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ غمگین ہو گا۔ اور اگر اپنے آپ کو اسکندریہ میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ ایسا کام کرے گاکہ جس سے پشیمان ہو گا۔
اور اگر اپنے آپ کو اندلس میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ اس کے ساتھ خیانت کی جائے گی ۔ اور اگر اپنے آپ] کو حصار میں دیکھے دلیل ہے کہ اس کا کام بند ہو گا ۔
اور اگر اپنے آپ کو اندلس میں دیکھے دلیل ہے کہ اس کے ساتھ خیانت کی جائے گی ۔ اور اگر اپنے آپ کو حصار میں دیکھے ۔ دلیل ہے کہ اس کا کام بند ہو گا۔
حضرت جعفر صادق علیہ السلام نے فرمایا ہے ۔ کہ میں شہروں کا دیکھنا چار وجہ پر ہے۔(۱)دین (۲)ظاہر ہونا (۳)عیش خوش(۴)عورت جو اس سے نکاح کرے گی ۔