اسد افراد کا نفسیات جائزہ

اسد عورت اور حکمرانی

یہ حقیقت ہے اسد عورتیں حکمرانی کی خواہش مند ہوتی ہیں۔ وہ چاہتی ہیں کہ لوگ ان کے اشاروں پر چلیں، اگر وہ تمام لوگوں پر اپنا حکم چلانے میں ناکام رہیں تو کم از کم اپنے شوہر اور سسرال والوں پر ضرور حکم چلانا چاہتی ہیں لیکن یہ ان کا غلط رویہ ہے۔
    ہماری طرز معاشرت میں بیوی کو حکم چلانے کا حق نہیں ہے اور ہر مرد گھر کا سربراہ تصور کیا جاتاہے، ایسے میں جب عورت اپنی حکمرانی قائم کرنے کی کوشش کرتی ہے تو تلخیاں، اختلاف اور جھگڑے جنم لیتے ہیں اس لئے ان خواتین کے لئے بہتر یہی ہے کہ اگر اپنے گھر کی سلامتی اور خوش حالی چاہتی ہیں تو اپنی فطرت پر قابو پائیں کیونکہ اگر یہ ا س کے مطابق زنگدی بسر کرنے کی کوشش کریں گی تو ان کی زندگی میں سکون نہیں ہوتا، بات زیادہ بڑھی تو نوبت طلاق تک بھی آ سکتی ہے۔
    یہ ماننے کی بات ہے کہ اسد عورتوں میں بہت حوصلہ ہوتا ہے اور ان کے ارادے بڑے مضبوط ہوتے ہیں، ان میں دنیا سے ٹکرا جانے کی صلاحیت بھی ہوتی ہے لیکن ذرا سوچیں اس طرح ٹکرانے سے فائدہ ہو گا یا نقصان؟ یقینا نقصان ہی ہو گا اس لئے کوشش کی جائے کہ ایسے نقصانات سے بچا جائے۔